گلوبل انفارمیشن سیکورٹی پاکستانی پروفشنلز کی جانب سے عید ملن پارٹی کا اہتمام

الریاض – گلوبل انفارمیشن سیکورٹی پاکستانی پروفشنلز کی جانب سے عید ملن پارٹی کا اہتمام کیا گیا جس میں سعودی عرب میں انفارمیشن سیکورٹی سے منسلک درجنوں افراد نے اپنے اہلخانہ کے ہمراہ شرکت کی،ریاض شہر سے باہر خوبصورت مقام پر منعقدہ تقریب میں جہاں بڑوں نے ملکر عید کی خوشیوں دوبالا کیا وہیں خواتین نے عید کے گزر دنوں کی مصروفیات اور عید کے رنگوں کو ایک دوسرے کے ساتھ بانٹ کر خوشی محسوس کی جبکہ بچہ پارٹی نےدیگر کھیلوں میں حصہ لینے کے علاوہ کوئز مقابلے میں فورم کے ایگزیکٹو ممبر منیر احمد شاد کے سوالوں کے جوابات دیکر انعامات بھی حاصل کیے جس پر بچوں نے خوشی کا اظہار کیاجبکہ گلوبل انفارمیشن سیکورٹی پاکستانی پروفشنلز کے سربراہ شہزاد سبحانی نے اپنے خطاب میں شرکاء کو عید کی مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ اللہ کی جانب سے عید جیسے اسلامی تہوار ہمارے لئے ایسی نعمت ہیں جس میں ہم مسلمان ملکر مناتے ہیں جس سے باہمی بھائی چارے اور مساوات کو فروغ ملتا ہے چونکہ سعودی عرب میں عید کے موقعہ پر بہت سے لوگ پاکستان چلے جاتے ہیں یا یہاں رہ کر گھروں تک محدود ہو جاتے ہیں اس لئے عید کے بعد اس عید ملن پارٹی کا انعقاد کیا گیا ہے تاکہ آپس میں ملکر دوبارہ عید کا سماں باندھا جائے،اس کے علاوہ شہزاد سبحانی نے گلوبل انفارمیشن سیکورٹی پاکستانی پروفشنلز کے قیام کے حوالے سے بتایا کہ اس میں تین سو کے قریب ایسے افراد ہیں جو سعودی عرب میں کام کر رہے ہیں ان کو اکٹھا کرنے کا مقصد ایک دوسرے کے تجربات سے استعفادہ کرنا ہے جبکہ ایسے ہمارے پاکستانی جو اس شعبے میں نئے یہاں آتے ہیں ان کی ٹریننگ کرنا اور ان کی رہنمائی شامل ہے جبکہ ہماری گزشتہ تین سالوں سے زیادہ تر یہ بھی کوشش رہی ہے کہ اس پروفیشن سے منسلک پاکستانیوں کو جاب کی سہولیات بھی فراہم کی جائے،انفارمیشن سیکورٹی کے حوالے سے ابھی تک پاکستان کے اندر اتنا کام نہیں ہو رہا تو ہم نے کوشش کی ہے کہ سٹوڈنٹس کے اندر اس پروفیشن کے حوالے سے آگاہی مہم کے ذریعے شعور بیدار کیا جائے تاکہ بنیادی چیزوں کو سمجھنے میں آسانی ہو اس سے پاکستان کے اندر بھی جو بڑے ادارے ہیں جن کی ویب سائٹس کو ہیک کر لیا جاتا ہے وہ بھی اپنے ادارے تو انفارمیشن سیکورٹی کے ذریعے محفوظ بناہیں اور لوگوں کو روزگار کا سلسلہ بھی شروع ہو جائے،ایگزیکٹو ممبر منیر احمد شاد کا کہنا تھا کہ بحیثیت پاکستانی ہمیں ایک دوسرے کی مدد کو یقینی بنانا چاہئیے تاکہ ہم مزید آگے بڑھ سکیں، کسی بھی ملک کی قوم جب اخوت اور بھائی چارے کی فضا کو فروغ دیکر آگے بڑھتی ہے تو پھر اس کی راہ میں کامیابی مقدر بن جاتی ہے اور ناکامی کا منہ نہیں دیکھنا پڑتا، باہمی بھائی چارہ اور میل جول ہمارے دین کا حصہ بھی ہے جسے اللہ نا صرف پسند کرتا ہے بلکے اس کے عوض میں اپنی نعمتوں سے بھی نوازتا ہے، پاکستان کی ترقی میں ہم سب کو ملکر ساتھ دینا ہوگا اور جس طرح سعودی عرب میں ہمارے ہروفشنلز اپنا کام کر رہے ہیں اس سے پاکستان کا نام مزید روشن ہو رہا ہے،اختتام عشائیے کی مزیدار کھانوں سےہوا جبکہ دیگر درجنوں شرکاء کی جانب سے بھی خوشی کا اظہار کیا گیا کہ عید کے بعد بھی جس طرح اس ایونٹ کو پر رونق بنایا گیا ہے اس سے خوشی محسوس ہوئی ہے

Facebook Comments