انڈس کلچرل اینڈ سوشل فورم کے صدر اسد اللہ جیتھیال کے اعزاز میں الوداعی تقریب

الریاض ۔ انڈس کلچرل اینڈ سوشل فورم کے صدر اسد اللہ جیتھیال کے اعزاز میں الوداعی تقریب منعقد ہوئی جس میں سندھی کیمونٹی کے علاوہ شہر ریاض کے دیگر اکابرین بھی شریک ہوئے، جبکہ کیمونٹی ویلفئیر اتاشی محمود لطیف بطور مہمان خصوصی شریک ہوئے، اس موقعہ پر محمود لطیف نے اسداللہ جیتھیال کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ انہوں نے جس طرح فلاحی کاموں میں حصہ لیا ہے ان کو کبھی فراموش نہیں کیا جا سکتا، سندھ کی دھرتی محبتیں بانٹتے والوں کی دھرتی ہے، اور یہی وجہ ہے کہ اس کے رنگ انڈس فورم کے پلیٹ فارم سے بلاتفریق ہر سو پھیلے، نوجوانوں کے روزگار اور ان میں فنی مہارت کے لئے جس طرح انڈس فورم اور خاص طور پر اسداللہ جیتھیال نے کام کیا ہے اگر سبھی لوگ ایسا سوچیں اور لوگوں کی مدد کریں تو معاشرے میں باہمی بھائی چارے کی فضا بھی بڑھے گی اور لوگوں کے مابین روابط بھی بہتر ہونگے، محمود لطیف کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کو بھی ایسے تجربہ کار افراد کی ضرورت ہے اس لئے جو افراد بیرون ممالک میں اچھی پوزیشن پر ہیں ان کو چاہئیے کہ وہ پاکستان کے اندر بھی ایسے پروجیکٹ کریں جس سے عام آدمی بہتر طور پر مستفید ہوسکے، اور ہمیں اس بات پر بھی فخر ہے ہمارے نوجوان بیرون ممالک میں کارہائے نمایاں سرانجام دیکر ملک کا نام روشن کر رہے ہیں، اسد اللہ جیتھیال نے اپنے الوداعی خطاب میں کہا کہ انسانی بھلائی کے کام کرنا ہم سب پر لازم ہے، ہم نے کب سندھی کیمونٹی پر مشتمل انڈس فورم کی بنیاد رکھی تو ہماری کوشش رہی کہ اس سے سبھی مستفید ہوں، اور ہم نے دیکھا کہ ہمارے کام کو پاکستان کے ہر صوبے سے تعلق رکھنے والے شخص نے ہمارے کام کو سراہا بھی اور اس سے مستفید بھی ہوئے میرا ماننا ہے کہ پہلے خود کو اتنا مظبوط بناو کہ آپ باقی لوگوں کی بہتر مدد کر سکیں، پاکستان ہمارا ملک ہے اور اس کی بہتری کی ذمےداری بھی ہم ہر ہی ہے، وہ عرصہ دراز سے سعودی عرب میں مقیم ہیں اور آئی ٹی کے شعبے سے منسلک رہے ہیں اور اب ان اگلا مسکن آسٹریلیا ہوگا، تاہم ان کی کوشش ہوگی کہ وہ سعودی عرب کی طرح وہاں بھی اسی طرح کام کریں،مگر جو محبت اور پیار سعودی عرب میں ملا ہے اس کو کبھی بھلایا نہیں جاسکتا، سفارت خانہ پاکستان کے علاوہ پوری کیمونٹی نے بھی ہمارا ساتھ دیا جس پر میں تمام افراد کا ہمیشہ مشکور رہوں گا،انڈس فورم کے چیرمین عبدالقادر ملاح نے کہا کہ انڈس کلچرل اینڈ سوشل فورم نے سعودی عرب میں مزدور طبقے کو ہنر مند بنانے میں اب تک اہم کردار ادا کیا اس کے علاوہ لوگوں کی تفریح کے لئے اب تک کئی ایک میوزیکل ایونٹ بھی کروا چکے ہیں جن میں پاکستان کے نامور گلوکاروں نے شرکت کی، انڈس کلچرل اور سوشل فورم کے نومنتخب صدر ذیشان قاضی کا کہنا تھا کہ اسد اللہ جیتھیال نے بڑی دلجمی کے ساتھ کئی سال تک صدارتی فرائض سرانجام دئیے اور ہمیں بھی ان سے بہت کچھ سیکھنے کو ملا، اور میری بھی کوشش رہے گی کہ انہی کی طرح کام کروں تاکہ لوگوں کی فلاح وبہبود کو مزید بہتر بنایا جاسکے، بابائے ریاض قاضی اسحاق میمن کا کہنا تھا کہ سندھی قوم نے ہمیشہ پاکستان کی عزت و تکریم میں اضافہ کیا ہے اور محبتوں کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ اپنے کلچر کو ملک سے باہر بھی اجاگر کیا ہے اور ہمیں فخر ہے کہ ہم قدیم روایات کے امین ہیں آج ملک کے اندر اور باہر سندھی کلچر ڈے جس جوش سے منایا جاتا ہے اس میں اسد اللہ جیتھیال، عبدالقادر ملاح، ذیشان قاضی، ڈاکٹر منصور میمن اور دیگر ایسے نوجوانوں کی محنت ہے کہ آج سندھ آگے بھی بڑھ رہا ہے اور اس میں شعور بھی بیدار ہو رہا ہے، ان بچوں کی جانب سے یہاں بیٹھ کر اندرون سندھ کے لئے اب تک گراں قدر خدمات سرانجام دی گئی ہیں جس پر میں ان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں،تقریب میں حافظ عبدالوحید،الیاس رحیم، خالد اکرم رانا، گل زیب کیانی,ڈاکٹر اورنگزیب، ڈاکٹر رجب خواجہ، ڈاکٹر منصور میمن نے اسد اللہ جیتھیال کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور ان کی خدمات کو سراہا، تلاوت کلام پاک کی سعادت ڈاکٹر مصطفی کمال میمن نے حاصل کی نظامت کے فرائض رشید سرکی نے ادا کیے جبکہ آخر میں ڈاکٹر حبیب میمن نے تقریب کے شرکاء کواختتامی خطاب کیا جس میں ان کا کہنا تھا کہ ریاض کیمونٹی ہمیشہ ہمارے ساتھ رہی ہے اور انہی کی حوصلہ افزائی کی بدولت ہم آگے بڑھتے ہیں اور کامیاب ہوتے ہیں۔

Facebook Comments